میں آرزوئے جاں لکھوں یا جان آرزو!

اختر شیرانی

میں آرزوئے جاں لکھوں یا جان آرزو!

اختر شیرانی

MORE BYاختر شیرانی

    میں آرزوئے جاں لکھوں یا جان آرزو!

    تو ہی بتا دے ناز سے ایمان آرزو!

    آنسو نکل رہے ہیں تصور میں بن کے پھول

    شاداب ہو رہا ہے گلستان آرزو!

    ایمان و جاں نثار تری اک نگاہ پر

    تو جان آرزو ہے تو ایمان آرزو!

    ہونے کو ہے طلوع صباح شب وصال

    بجھنے کو ہے چراغ شبستان آرزو!

    اک وہ کہ آرزؤں پہ جیتے ہیں عمر بھر

    اک ہم کہ ہیں ابھی سے پشیمان آرزو!

    آنکھوں سے جوئے خوں ہے رواں دل ہے داغ داغ

    دیکھے کوئی بہار گلستان آرزو!

    دل میں نشاط رفتہ کی دھندلی سی یاد ہے

    یا شمع وصل ہے تہ دامان آرزو!

    اخترؔ کو زندگی کا بھروسہ نہیں رہا

    جب سے لٹا چکے سر و سامان آرزو!

    ویڈیو
    This video is playing from YouTube

    Videos
    This video is playing from YouTube

    نامعلوم

    نامعلوم

    RECITATIONS

    منور سلطانہ

    منور سلطانہ

    منور سلطانہ

    میں آرزوئے جاں لکھوں یا جان آرزو! منور سلطانہ

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY