میں ڈھونڈتا ہوں جسے وہ جہاں نہیں ملتا

کیفی اعظمی

میں ڈھونڈتا ہوں جسے وہ جہاں نہیں ملتا

کیفی اعظمی

MORE BY کیفی اعظمی

    میں ڈھونڈتا ہوں جسے وہ جہاں نہیں ملتا

    نئی زمین نیا آسماں نہیں ملتا

    نئی زمین نیا آسماں بھی مل جائے

    نئے بشر کا کہیں کچھ نشاں نہیں ملتا

    وہ تیغ مل گئی جس سے ہوا ہے قتل مرا

    کسی کے ہاتھ کا اس پر نشاں نہیں ملتا

    وہ میرا گاؤں ہے وہ میرے گاؤں کے چولھے

    کہ جن میں شعلے تو شعلے دھواں نہیں ملتا

    جو اک خدا نہیں ملتا تو اتنا ماتم کیوں

    یہاں تو کوئی مرا ہم زباں نہیں ملتا

    کھڑا ہوں کب سے میں چہروں کے ایک جنگل میں

    تمہارے چہرے کا کچھ بھی یہاں نہیں ملتا

    ویڈیو
    This video is playing from YouTube

    Videos
    This video is playing from YouTube

    ریتا گانگولی

    ریتا گانگولی

    بیگم اختر

    بیگم اختر

    RECITATIONS

    نعمان شوق

    نعمان شوق

    نعمان شوق

    میں ڈھونڈتا ہوں جسے وہ جہاں نہیں ملتا نعمان شوق

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY