میں نے ارادہ جب بھی کیا ہے اڑان کا

حبیب کیفی

میں نے ارادہ جب بھی کیا ہے اڑان کا

حبیب کیفی

MORE BYحبیب کیفی

    میں نے ارادہ جب بھی کیا ہے اڑان کا

    اس کو خیال آیا ہے تیر و کمان کا

    آئے خیال اپنی زمیں کا بھی کچھ انہیں

    رکھتے ہیں درد دل میں جو سارے جہان کا

    پھر شہر دوستاں کی طرف گامزن ہوں میں

    گو جانتا ہوں شہر میں خطرہ ہے جان کا

    ہم کو زمیں سے خوب تر آیا نہ کچھ نظر

    چکر لگا کے دیکھ چکے آسمان کا

    از خود ہی خواہشیں مری محدود ہو گئیں

    آیا خیال جب مجھے اپنے مکان کا

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY