Font by Mehr Nastaliq Web

aaj ik aur baras biit gayā us ke baġhair

jis ke hote hue hote the zamāne mere

رد کریں ڈاؤن لوڈ شعر

مجھ کو جو کہتے ہو میاں تم ہو کہاں تم ہو کہاں

رضا عظیم آبادی

مجھ کو جو کہتے ہو میاں تم ہو کہاں تم ہو کہاں

رضا عظیم آبادی

MORE BYرضا عظیم آبادی

    مجھ کو جو کہتے ہو میاں تم ہو کہاں تم ہو کہاں

    دل کہاں ہے پاس میرے میری جاں تم ہو کہاں

    وہ گلی ہے یا پری خانہ ہے یا فردوس ہے

    سچ کہو اے ہمدمو میں ہوں کہاں تم ہو کہاں

    اپنے سے اپنا نہ ہو کام اوروں سے رکھیے امید

    کیا وصیت کرتے ہو اے دوستاں تم ہو کہاں

    گل کھلیں گے بار بار اور آئے گی ہر پھر بہار

    ہے ہمیشہ سیر گل زار جہاں تم ہو کہاں

    جب جوانی گئی رہا کیا آنا جانا سب گیا

    آؤ جانے دو وو باتیں اے میاں تم ہو کہاں

    دیکھنے کا چاؤ یہ عینک اترتی ہی نہیں

    دیکھو تم اپنی طرف اے مہرباں تم ہو کہاں

    پوچھتے ہیں حال تو منہ دیکھ رہتے ہو رضاؔ

    دل کہیں اور ہی ہے سنتے ہو میاں تم ہو کہاں

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY

    Jashn-e-Rekhta | 8-9-10 December 2023 - Major Dhyan Chand National Stadium, Near India Gate - New Delhi

    GET YOUR PASS
    بولیے