مجھے مجھ سے ملاتی جا رہی ہے

عارف امام

مجھے مجھ سے ملاتی جا رہی ہے

عارف امام

MORE BYعارف امام

    مجھے مجھ سے ملاتی جا رہی ہے

    فقیری راس آتی جا رہی ہے

    یہ مٹی میرے خال و خد چرا کر

    ترا چہرہ بناتی جا رہی ہے

    یہ کس کی یاد ہے جو میرے دل میں

    مصلے سے بچھاتی جا رہی ہے

    عجب شے ہے سخن کی سر بلندی

    مرے سر کو جھکاتی جا رہی ہے

    جو مستی رقص میں رکھتی تھی مجھ کو

    وہ سجدوں میں رلاتی جا رہی ہے

    لہو بہنے لگا ہے ایڑیوں تک

    عبادت رنگ لاتی جا رہی ہے

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY
    بولیے