نہ مسجد ہے کوئی نہ چرچ ہے نہ کوئی مندر ہے

بھاسکر شکلا

نہ مسجد ہے کوئی نہ چرچ ہے نہ کوئی مندر ہے

بھاسکر شکلا

MORE BY بھاسکر شکلا

    نہ مسجد ہے کوئی نہ چرچ ہے نہ کوئی مندر ہے

    اگر گھر ہے کہیں اس کا تو تیرے دل کے اندر ہے

    زمانے کی نظر کو وہ بھلا آئے نظر کیسے

    نہ اس کا رنگ ہے نہ روپ ہے نہ کوئی پیکر ہے

    پرندوں میں چہکتا ہے گلوں میں وہ مہکتا ہے

    ہے اس کی ہی اداکاری جو یہ قدرت کا منظر ہے

    میں ہندو ہوں مسلماں تم یہ ہیں انسان کی باتیں

    وہ ہے خالق سبھی کا اس کے آگے سب برابر ہے

    ہے اندازہ مجھے آگے سفر مشکل بہت ہوگا

    مگر جب ہم سفر تو ہے تو پھر کس بات کا ڈر ہے

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY