نقاب حسن دوعالم اٹھائی جاتی ہے

جگر مراد آبادی

نقاب حسن دوعالم اٹھائی جاتی ہے

جگر مراد آبادی

MORE BY جگر مراد آبادی

    نقاب حسن دوعالم اٹھائی جاتی ہے

    مجھی کو میری تجلی دکھائی جاتی ہے

    قدم قدم مری ہمت بڑھائی جاتی ہے

    نفس نفس تری آہٹ سی پائی جاتی ہے

    وہ اک نظر جو بہ مشکل اٹھائی جاتی ہے

    وہی نظر رگ و پے میں سمائی جاتی ہے

    سکوں ہے موت یہاں ذوق جستجو کے لیے

    یہ تشنگی وہ نہیں جو بجھائی جاتی ہے

    خدا وہ درد محبت ہر ایک کو بخشے

    کہ جس میں روح کی تسکین بھی پائی جاتی ہے

    وہ مے کدہ ہے تری انجمن خدا رکھے

    جہاں خیال سے پہلے پلائی جاتی ہے

    ترے حضور یہ کیا واردات قلب ہے آج

    کہ جیسے چاند پہ بدلی سی چھائی جاتی ہے

    تجھے خبر ہو تو اتنی نہ فرصت غم دے

    کہ تیری یاد بھی اکثر ستائی جاتی ہے

    وہ چیز کہتے ہیں فردوس گم شدہ جس کو

    کبھی کبھی تری آنکھوں میں پائی جاتی ہے

    قریب منزل آخر ہے الفراق جگرؔ

    سفر تمام ہوا نیند آئی جاتی ہے

    RECITATIONS

    خالد مبشر

    خالد مبشر

    خالد مبشر

    نقاب حسن دوعالم اٹھائی جاتی ہے خالد مبشر

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY

    Added to your favorites

    Removed from your favorites