نظر ہتھیار کرنا چاہتے ہیں

ایمن جنید خان

نظر ہتھیار کرنا چاہتے ہیں

ایمن جنید خان

MORE BYایمن جنید خان

    نظر ہتھیار کرنا چاہتے ہیں

    ادا سے وار کرنا چاہتے ہیں

    نگاہیں چار کرنا چاہتے ہیں

    تمہیں ہم پیار کرنا چاہتے ہیں

    رہے ہیں صبر کی بستی میں زندہ

    تو اب اظہار کرنا چاہتے ہیں

    نگاہیں بند کر لی ہیں کہ جاناں

    ترا دیدار کرنا چاہتے ہیں

    بنا کر حوصلہ پتوار اب ہم

    سمندر پار کرنا چاہتے ہیں

    اداکاری دغا دینے کی کر کے

    تجھے ہشیار کرنا چاہتے ہیں

    سنا کر داستاں ترک تعلق

    زمیں ہموار کرنا چاہتے ہیں

    ردائے بے حسی اوڑھے ہیں یاں جو

    انہیں بیدار کرنا چاہتے ہیں

    ہلیں گے لفظوں سے ایوان سارے

    قلم تلوار کرنا چاہتے ہیں

    گرفتار محبت کر کے ایمنؔ

    غضب سرکار کرنا چاہتے ہیں

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY