نظروں میں کہاں اس کی وہ پہلا سا رہا میں

یعقوب عامر

نظروں میں کہاں اس کی وہ پہلا سا رہا میں

یعقوب عامر

MORE BYیعقوب عامر

    نظروں میں کہاں اس کی وہ پہلا سا رہا میں

    ہنستا ہوں کہ کیا سوچ کے کرتا تھا وفا میں

    تو کون ہے اے ذہن کی دستک یہ بتا دے

    ہر بار کی آواز پہ دیتا ہوں صدا میں

    یاد آتا ہے بچپن میں بھی استاد نے میرے

    جس راہ سے روکا تھا وہی راہ چلا میں

    جی خوش ہوا دیکھے سے کہ آزاد فضا ہے

    بستی سے گزرتا ہوا صحرا میں رکا میں

    مدت ہوئی دیکھے ہوئے وہ شہر نگاراں

    اے دل کہیں بھولا تو نہیں تیری ادا میں

    منزل کی طلب میں نہ تھا آسان گزرنا

    پتھر تھے بہت راہ میں گر گر کے اٹھا میں

    کیا دن ہیں کہ اب موت کی خواہش ہے برابر

    کیا دن تھے کہ جب جینے کی کرتا تھا دعا میں

    سچ کہیو کہ واقف ہو مرے حال سے عامرؔ

    دنیا ہے خفا مجھ سے کہ دنیا سے خفا میں

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY