پربت ترے پہلو میں اگر کھائی نہیں ہے

احتشام حسن

پربت ترے پہلو میں اگر کھائی نہیں ہے

احتشام حسن

MORE BYاحتشام حسن

    پربت ترے پہلو میں اگر کھائی نہیں ہے

    کاہے کی بلندی جہاں گہرائی نہیں ہے

    اب کوئی وہاں اس لیے ہوتا نہیں رسوا

    کوچے میں ترے کوئی تماشائی نہیں ہے

    حضرت جو رواداری نظر آپ میں آئی

    کیوں آپ کے بچوں میں نظر آئی نہیں ہے

    دنیا نے تو اس میں بھی کئی نقص نکالے

    تصویر جو میں نے ابھی بنوائی نہیں ہے

    اس واسطے بھی روشنی ہے باعث وحشت

    آنکھوں کی چراغوں سے شناسائی نہیں ہے

    خود بانٹ کے آئیں گے وہاں اپنی صدا ہم

    جس سمت ہواؤں نے یہ پہنچائی نہیں ہے

    شاید کہ ہر اک شخص کو ہوتی ہے محبت

    اور سب ہی یہ کہتے ہیں کہ دانائی نہیں ہے

    لوگوں سے حسنؔ کر کے کئی بار کنارہ

    دیکھا ہے کسی کام کی تنہائی نہیں ہے

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY