Font by Mehr Nastaliq Web

aaj ik aur baras biit gayā us ke baġhair

jis ke hote hue hote the zamāne mere

رد کریں ڈاؤن لوڈ شعر

ربط ہو غیر سے اگر کچھ ہے

رونق ٹونکوی

ربط ہو غیر سے اگر کچھ ہے

رونق ٹونکوی

MORE BYرونق ٹونکوی

    ربط ہو غیر سے اگر کچھ ہے

    اس طرف بھی مگر نظر کچھ ہے

    بے خبر ہے وہ ہر دو عالم سے

    جس کو اس شوخ کو خبر کچھ ہے

    یاں کوئی ماجرا شریک نہیں

    ہے اگر کچھ تو چشم تر کچھ ہے

    مٹ گیا قصہ مر گیا عاشق

    ہو مبارک تمہیں خبر کچھ ہے

    جستجو ہے وہیں وہیں ہے نظر

    جلوہ ریزی جدھر جدھر کچھ ہے

    ہے تماشا بقدر ذوق نگاہ

    دیکھتا ہوں جدھر ادھر کچھ ہے

    بد بلا ہے کسی کسی کی نظر

    تم نہ جانا کہ بام پر کچھ ہے

    عزم سوئے عدم تو ہے رونقؔ

    توشۂ راہ بھی مگر کچھ ہے

    مأخذ :
    • کتاب : intekhaabe-e-sukhan(jild-duum) (Pg. 126)

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY

    Jashn-e-Rekhta | 8-9-10 December 2023 - Major Dhyan Chand National Stadium, Near India Gate - New Delhi

    GET YOUR PASS
    بولیے