رہ عرفاں میں اپنے ہوش کو مائل سمجھتے ہیں

حفیظ فاطمہ بریلوی

رہ عرفاں میں اپنے ہوش کو مائل سمجھتے ہیں

حفیظ فاطمہ بریلوی

MORE BYحفیظ فاطمہ بریلوی

    رہ عرفاں میں اپنے ہوش کو مائل سمجھتے ہیں

    ہوئی جب بے خودی طاری اسے منزل سمجھتے ہیں

    وفوق شوق کو ہے تنگ اقصائے دو عالم بھی

    فضائے لا مکاں پرواز کے قابل سمجھتے ہیں

    بقا ظاہر میں ذرات عدم کا اک ہیولیٰ ہے

    حقیقت میں فنا کو زیست کا حاصل سمجھتے

    زمانہ کا اثر ہوتا نہیں ہے حال پر اپنے

    کہ یکساں حالت ماضی و مستقبل سمجھتے ہیں

    مأخذ :
    • کتاب : Pathan Shayraat ka Tazkira (Pg. 124)
    • Author : Khan Mohammad Atif
    • مطبع : Khan Mohammad Atif (1983)
    • اشاعت : 1983

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY