رخ پہ گیسو جو بکھر جائیں گے

بسمل  عظیم آبادی

رخ پہ گیسو جو بکھر جائیں گے

بسمل  عظیم آبادی

MORE BYبسمل  عظیم آبادی

    رخ پہ گیسو جو بکھر جائیں گے

    ہم اندھیرے میں کدھر جائیں گے

    اپنے شانے پہ نہ زلفیں چھوڑو

    دل کے شیرازے بکھر جائیں گے

    یار آیا نہ اگر وعدے پر

    ہم تو بے موت کے مر جائیں گے

    اپنے ہاتھوں سے پلا دے ساقی

    رند اک گھونٹ میں تر جائیں گے

    قافلے وقت کے رفتہ رفتہ

    کسی منزل پہ ٹھہر جائیں گے

    مسکرانے کی ضرورت کیا ہے

    مرنے والے یوں ہی مر جائیں گے

    ہو نہ مایوس خدا سے بسملؔ

    یہ برے دن بھی گزر جائیں گے

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY