سب سے بہتر ہے کہ مجھ پر مہرباں کوئی نہ ہو

زین العابدین خاں عارف

سب سے بہتر ہے کہ مجھ پر مہرباں کوئی نہ ہو

زین العابدین خاں عارف

MORE BYزین العابدین خاں عارف

    سب سے بہتر ہے کہ مجھ پر مہرباں کوئی نہ ہو

    ہم نشیں کوئی نہ ہو اور رازداں کوئی نہ ہو

    مریے اس حسرت میں گر قاتل نہ ہاتھ آوے کہیں

    روئیے اپنے پہ خود گر نوحہ خواں کوئی نہ ہو

    بیچ میں ہے میرے اس کے تو ہی اے آہ حزیں

    صلح کیوں کر ہووے جب تک درمیاں کوئی نہ ہو

    شکوہ کس سے کیجیے خالق کی مرضی ہے یہی

    نکتہ چیں پیدا ہوں لاکھوں نکتہ داں کوئی نہ ہو

    مجھ تلک قاتل تو قاتل موت بھی آتی نہیں

    کس کو دیجے جان جب خواہان جاں کوئی نہ ہو

    مانے گر کوئی نصیحت عارفؔ دل خستہ کی

    بھول کر بھی والۂ آتش بجاں کوئی نہ ہو

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY