سما کر دل میں نظروں سے نہاں ہے

اختر شیرانی

سما کر دل میں نظروں سے نہاں ہے

اختر شیرانی

MORE BYاختر شیرانی

    سما کر دل میں نظروں سے نہاں ہے

    مجھے یاد آنے والے تو کہاں ہے

    خدائی کہکشاں کہتی ہے جس کو

    وہ عذرا کا خرام رائیگاں ہے

    اندھیرے بادلوں سے پوچھ زاہد

    مری کھوئی ہوئی توبہ کہاں ہے

    یہ کس نے پیار کی نظروں سے دیکھا

    کہ میرے دل کی دنیا پھر جواں ہے

    جوانی رائیگاں جائے تو اچھا

    جوانی ایک خواب رائیگاں ہے

    مآخذ:

    • کتاب : Kulliyat-e-Akhtar Shirani (Pg. 252)
    • Author : Akhtar Shirani
    • مطبع : Modern Publishing House, Daryaganj New delhi (1997)
    • اشاعت : 1997

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY