سلسلے کے بعد کوئی سلسلہ روشن کریں

ظفر گورکھپوری

سلسلے کے بعد کوئی سلسلہ روشن کریں

ظفر گورکھپوری

MORE BY ظفر گورکھپوری

    سلسلے کے بعد کوئی سلسلہ روشن کریں

    اک دیا جب ساتھ چھوڑے دوسرا روشن کریں

    اس طرح تو اور بھی کچھ بوجھ ہو جائے گی رات

    کچھ کہیں کوئی چراغ واقعہ روشن کریں

    جانے والے ساتھ اپنے لے گئے اپنے چراغ

    آنے والے لوگ اپنا راستہ روشن کریں

    جلتی بجھتی روشنی کا کھیل بچوں کو دکھائیں

    شمع رکھیں ہاتھ میں گھر میں ہوا روشن کریں

    آگہی دانش دعا جذبہ عقیدہ فلسفہ

    اتنی قبریں ہائے کس کس پر دیا روشن کریں

    شام یادوں سے معطر ہے منور ہے ظفرؔ

    آج خوشبو کے وضو سے دست و پا روشن کریں

    ویڈیو
    This video is playing from YouTube

    Videos
    This video is playing from YouTube

    نامعلوم

    نامعلوم

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY