سوچا نہیں اچھا برا دیکھا سنا کچھ بھی نہیں

بشیر بدر

سوچا نہیں اچھا برا دیکھا سنا کچھ بھی نہیں

بشیر بدر

MORE BY بشیر بدر

    سوچا نہیں اچھا برا دیکھا سنا کچھ بھی نہیں

    مانگا خدا سے رات دن تیرے سوا کچھ بھی نہیں

    سوچا تجھے دیکھا تجھے چاہا تجھے پوجا تجھے

    میری خطا میری وفا تیری خطا کچھ بھی نہیں

    جس پر ہماری آنکھ نے موتی بچھائے رات بھر

    بھیجا وہی کاغذ اسے ہم نے لکھا کچھ بھی نہیں

    اک شام کے سائے تلے بیٹھے رہے وہ دیر تک

    آنکھوں سے کی باتیں بہت منہ سے کہا کچھ بھی نہیں

    احساس کی خوشبو کہاں آواز کے جگنو کہاں

    خاموش یادوں کے سوا گھر میں رہا کچھ بھی نہیں

    دو چار دن کی بات ہے دل خاک میں مل جائے گا

    جب آگ پر کاغذ رکھا باقی بچا کچھ بھی نہیں

    ویڈیو
    This video is playing from YouTube

    Videos
    This video is playing from YouTube

    چترا سنگھ

    چترا سنگھ

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY