تیرے پاس ہوں پر تجھ سے امان کا ڈر ہے

ششی کانت ورما

تیرے پاس ہوں پر تجھ سے امان کا ڈر ہے

ششی کانت ورما

MORE BYششی کانت ورما

    تیرے پاس ہوں پر تجھ سے امان کا ڈر ہے

    عشق ہو رہا ہے اب یعنی جان کا ڈر ہے

    خامشی بھی دل میں کچھ اس طرح سے ہے قائم

    مانو لفظوں کو میرے اب زبان کا ڈر ہے

    اب یہاں قیامت کا تو نہیں ہے کوئی ڈر

    پر جہان کو تو خود اس جہان کا ڈر ہے

    ڈر تو ہر کسی کو لگتا ہے جنگ سے یعنی

    ڈر وہی ہے تیروں کا جو کمان کا ڈر ہے

    سادگی سے ڈھک بھی لوں گا میں خامیاں اپنی

    سادگی کو بھی میری پر گمان کا ڈر ہے

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY