تیرے وعدے کو کبھی جھوٹ نہیں سمجھوں گا

شہریار

تیرے وعدے کو کبھی جھوٹ نہیں سمجھوں گا

شہریار

MORE BYشہریار

    تیرے وعدے کو کبھی جھوٹ نہیں سمجھوں گا

    آج کی رات بھی دروازہ کھلا رکھوں گا

    دیکھنے کے لیے اک چہرہ بہت ہوتا ہے

    آنکھ جب تک ہے تجھے صرف تجھے دیکھوں گا

    میری تنہائی کی رسوائی کی منزل آئی

    وصل کے لمحے سے میں ہجر کی شب بدلوں گا

    شام ہوتے ہی کھلی سڑکوں کی یاد آتی ہے

    سوچتا روز ہوں میں گھر سے نہیں نکلوں گا

    تاکہ محفوظ رہے میرے قلم کی حرمت

    سچ مجھے لکھنا ہے میں حسن کو سچ لکھوں گا

    موضوعات:

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY