ترے خیال کا چرچا ترے خیال کی بات

اندرا ورما

ترے خیال کا چرچا ترے خیال کی بات

اندرا ورما

MORE BYاندرا ورما

    ترے خیال کا چرچا ترے خیال کی بات

    شب فراق میں پیہم رہی وصال کی بات

    Thinking of you, talking about thoughts about you,

    The Night of Separation is seamless with the talk of union

    تم اپنی چارہ گری کو نہ پھر کرو رسوا

    ہمارے حال پہ چھوڑو ہمارے حال کی بات

    Don't bring shame to your powers of healing

    Leave it to us to deal with our own state

    کماں سی ابرو کا عالم عجیب ہے دیکھو

    فلک کے چاند سے بہتر ہے اس ہلال کی بات

    See, the brow like an arched bow is an amazing sight

    Its luminosity is greater than the new moon in the skies

    یہی فسانہ رہا ہے جنوں کے صحرا میں

    کبھی فراق کے قصے کبھی وصال کی بات

    It has always been so in the desert of mad longing

    sometimes the legends of partings, sometimes the talk of meeting

    بہار آئی تو کھل کر کہا ہے پھولوں نے

    یہ کس نے چھیڑ دی گلشن میں پھر جمال کی بات

    With the coming of spring, flowers have burst into speech

    Who has again spread this tale of beauty in the garden

    تو اپنے آپ میں تنہا ہے میری نظروں میں

    کہاں سے ڈھونڈ کے لاؤں ترے مثال کی بات

    You alone are the only one in my eyes

    Where shall I find another one like you

    بنا طلب کے عطا کر رہا ہے وہ مجھ کو

    لبوں پہ میرے نہ آئے کبھی سوال کی بات

    Wiithout asking, he grants me gifts

    Never should a request ever arise on my lips

    RECITATIONS

    رادھکا چوپڑا

    رادھکا چوپڑا

    رادھکا چوپڑا

    ترے خیال کا چرچا ترے خیال کی بات رادھکا چوپڑا

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY