تم پہ کیا بیت گئی کچھ تو بتاؤ یارو

جاں نثاراختر

تم پہ کیا بیت گئی کچھ تو بتاؤ یارو

جاں نثاراختر

MORE BY جاں نثاراختر

    تم پہ کیا بیت گئی کچھ تو بتاؤ یارو

    میں کوئی غیر نہیں ہوں کہ چھپاؤ یارو

    ان اندھیروں سے نکلنے کی کوئی راہ کرو

    خون دل سے کوئی مشعل ہی جلاؤ یارو

    ایک بھی خواب نہ ہو جن میں وہ آنکھیں کیا ہیں

    اک نہ اک خواب تو آنکھوں میں بساؤ یارو

    بوجھ دنیا کا اٹھاؤں گا اکیلا کب تک

    ہو سکے تم سے تو کچھ ہاتھ بٹاؤ یارو

    زندگی یوں تو نہ بانہوں میں چلی آئے گی

    غم دوراں کے ذرا ناز اٹھاؤ یارو

    عمر بھر قتل ہوا ہوں میں تمہاری خاطر

    آخری وقت تو سولی نہ چڑھاؤ یارو

    اور کچھ دیر تمہیں دیکھ کے جی لوں ٹھہرو

    میری بالیں سے ابھی اٹھ کے نہ جاؤ یارو

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY