تمہیں اس سے محبت ہے تو ہمت کیوں نہیں کرتے

فرحت احساس

تمہیں اس سے محبت ہے تو ہمت کیوں نہیں کرتے

فرحت احساس

MORE BYفرحت احساس

    تمہیں اس سے محبت ہے تو ہمت کیوں نہیں کرتے

    کسی دن اس کے در پہ رقص وحشت کیوں نہیں کرتے

    علاج اپنا کراتے پھر رہے ہو جانے کس کس سے

    محبت کر کے دیکھو نا محبت کیوں نہیں کرتے

    تمہارے دل پہ اپنا نام لکھا ہم نے دیکھا ہے

    ہماری چیز پھر ہم کو عنایت کیوں نہیں کرتے

    مری دل کی تباہی کی شکایت پر کہا اس نے

    تم اپنے گھر کی چیزوں کی حفاظت کیوں نہیں کرتے

    بدن بیٹھا ہے کب سے کاسۂ امید کی صورت

    سو دے کر وصل کی خیرات رخصت کیوں نہیں کرتے

    قیامت دیکھنے کے شوق میں ہم مر مٹے تم پر

    قیامت کرنے والو اب قیامت کیوں نہیں کرتے

    میں اپنے ساتھ جذبوں کی جماعت لے کے آیا ہوں

    جب اتنے مقتدی ہیں تو امامت کیوں نہیں کرتے

    تم اپنے ہونٹھ آئینے میں دیکھو اور پھر سوچو

    کہ ہم صرف ایک بوسہ پر قناعت کیوں نہیں کرتے

    بہت ناراض ہے وہ اور اسے ہم سے شکایت ہے

    کہ اس ناراضگی کی بھی شکایت کیوں نہیں کرتے

    کبھی اللہ میاں پوچھیں گے تب ان کو بتائیں گے

    کسی کو کیوں بتائیں ہم عبادت کیوں نہیں کرتے

    مرتب کر لیا ہے کلیات زخم اگر اپنا

    تو پھر احساسؔ جی اس کی اشاعت کیوں نہیں کرتے

    ویڈیو
    This video is playing from YouTube

    Videos
    This video is playing from YouTube

    فرحت احساس

    فرحت احساس

    موضوعات :

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY