عمر بھر چارۂ جنوں نہ ہوا

جمیل الدین عالی

عمر بھر چارۂ جنوں نہ ہوا

جمیل الدین عالی

MORE BYجمیل الدین عالی

    عمر بھر چارۂ جنوں نہ ہوا

    اب یہ کیا سوچیے کہ کیوں نہ ہوا

    نہیں معلوم کیوں طبیعت میں

    آج رونے سے کچھ سکوں نہ ہوا

    کہیں وہ مائل کرم ہی نہ ہوں

    مسکرائے تو غم فزوں نہ ہوا

    ہم پئیں بھی تو کیا پئیں یہ مے

    بھر گیا جام لالہ گوں نہ ہوا

    شاید اب کے برس ہے ختم جنوں

    فصل گل میں مجھے جنوں نہ ہوا

    عشق کا ذکر شعر میں کیوں ہے

    یہ تو عالیؔ غم دروں نہ ہوا

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY