اسی جنت جہنم میں مروں گا

اعجاز گل

اسی جنت جہنم میں مروں گا

اعجاز گل

MORE BYاعجاز گل

    اسی جنت جہنم میں مروں گا

    گئے موسم کو آوازیں نہ دوں گا

    نئے جسموں سے مقتل جاگتے ہیں

    نئے لوگوں کے رستے پر چلوں گا

    مری آنکھیں سلامت ہیں تو پھر میں

    پرائے خواب لے کر کیا کروں گا

    لہو کی سرخیاں میرے علم ہیں

    خزاں کے زرد لشکر سے لڑوں گا

    کسی خطے میں قتل روشنی ہو

    میں اپنے شہر پر نوحہ کہوں گا

    اور اس پر جو ستم ٹوٹے گا اس کو

    تمہارے نام لکھوں گا سہوں گا

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY