وہ چپ چاپ آنسو بہانے کی راتیں

فراق گورکھپوری

وہ چپ چاپ آنسو بہانے کی راتیں

فراق گورکھپوری

MORE BYفراق گورکھپوری

    وہ چپ چاپ آنسو بہانے کی راتیں

    وہ اک شخص کے یاد آنے کی راتیں

    شب مہ کی وہ ٹھنڈی آنچیں وہ شبنم

    ترے حسن کے رسمسانے کی راتیں

    جوانی کی دوشیزگی کا تبسم

    گل زار کے وہ کھلانے کی راتیں

    پھواریں سی نغموں کی پڑتی ہوں جیسے

    کچھ اس لب کے سننے سنانے کی راتیں

    مجھے یاد ہے تیری ہر صبح رخصت

    مجھے یاد ہیں تیرے آنے کی راتیں

    پر اسرار سی میری عرض تمنا

    وہ کچھ زیر لب مسکرانے کی راتیں

    سر شام سے رتجگا کے وہ ساماں

    وہ پچھلے پہر نیند آنے کی راتیں

    سر شام سے تا سحر قرب جاناں

    نہ جانے وہ تھیں کس زمانے کی راتیں

    سر میکدہ تشنگی کی وہ قسمیں

    وہ ساقی سے باتیں بنانے کی راتیں

    ہم آغوشیاں شاہد مہرباں کی

    زمانے کے غم بھول جانے کی راتیں

    فراقؔ اپنی قسمت میں شاید نہیں تھے

    ٹھکانے کے دن یا ٹھکانے کی راتیں

    مأخذ :
    • کتاب : Gul-e-Naghma (Pg. 57)
    • Author : Firaq Gorakhpuri
    • مطبع : Maktaba Farogh-e-urdu Matia Mahal Jama Masjid Delhi (2006)
    • اشاعت : 2006

    موضوعات :

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY