وہ کبھی مل جائیں تو کیا کیجئے

اختر شیرانی

وہ کبھی مل جائیں تو کیا کیجئے

اختر شیرانی

MORE BYاختر شیرانی

    وہ کبھی مل جائیں تو کیا کیجئے

    رات دن صورت کو دیکھا کیجئے

    چاندنی راتوں میں اک اک پھول کو

    بے خودی کہتی ہے سجدہ کیجئے

    جو تمنا بر نہ آئے عمر بھر

    عمر بھر اس کی تمنا کیجئے

    عشق کی رنگینیوں میں ڈوب کر

    چاندنی راتوں میں رویا کیجئے

    پوچھ بیٹھے ہیں ہمارا حال وہ

    بے خودی تو ہی بتا کیا کیجئے

    ہم ہی اس کے عشق کے قابل نہ تھے

    کیوں کسی ظالم کا شکوہ کیجئے

    آپ ہی نے درد دل بخشا ہمیں

    آپ ہی اس کا مداوا کیجئے

    کہتے ہیں اخترؔ وہ سن کر میرے شعر

    اس طرح ہم کو نہ رسوا کیجئے

    ویڈیو
    This video is playing from YouTube

    Videos
    This video is playing from YouTube

    فریدہ خانم

    فریدہ خانم

    غلام علی

    غلام علی

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY