وہ میرے حال پہ رویا بھی مسکرایا بھی

آنس معین

وہ میرے حال پہ رویا بھی مسکرایا بھی

آنس معین

MORE BYآنس معین

    وہ میرے حال پہ رویا بھی مسکرایا بھی

    عجیب شخص ہے اپنا بھی ہے پرایا بھی

    یہ انتظار سحر کا تھا یا تمہارا تھا

    دیا جلایا بھی میں نے دیا بجھایا بھی

    میں چاہتا ہوں ٹھہر جائے چشم دریا میں

    لرزتا عکس تمہارا بھی میرا سایا بھی

    بہت مہین تھا پردہ لرزتی آنکھوں کا

    مجھے دکھایا بھی تو نے مجھے چھپایا بھی

    بیاض بھر بھی گئی اور پھر بھی سادہ ہے

    تمہارے نام کو لکھا بھی اور مٹایا بھی

    RECITATIONS

    نعمان شوق

    نعمان شوق

    نعمان شوق

    وہ میرے حال پہ رویا بھی مسکرایا بھی نعمان شوق

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY