وہ تو نہیں ملا ہے سانسوں جئے تو کیا ہے

رؤف رضا

وہ تو نہیں ملا ہے سانسوں جئے تو کیا ہے

رؤف رضا

MORE BYرؤف رضا

    وہ تو نہیں ملا ہے سانسوں جئے تو کیا ہے

    دل اب بھی پیاس پر ہے غم پی لیے تو کیا ہے

    ساری خوشی ہماری آنکھوں سے چھن رہی ہے

    کچھ دیر تم نے گیسو لہرا دیئے تو کیا ہے

    بے تابیاں بھی کتنی منہ زور ہو گئیں ہیں

    طوفان جاتے جاتے کچھ مر لیے تو کیا ہے

    میں بھی وہاں پرانے زخموں کو دھو رہا تھا

    تو نے بھی آج دن بھر دکھڑے سئے تو کیا ہے

    ہنس ہنس کے کہہ رہا ہے یہ رات کا دریچہ

    اب گونج ابھر رہی ہے لب سی لیے تو کیا ہے

    اس مے کدے میں اب بھی تقسیم ہے پرانی

    چھلکا دیئے تو کیا ہے الٹا دیئے تو کیا ہے

    ویڈیو
    This video is playing from YouTube

    Videos
    This video is playing from YouTube

    رؤف رضا

    رؤف رضا

    RECITATIONS

    رؤف رضا

    رؤف رضا

    رؤف رضا

    وہ تو نہیں ملا ہے سانسوں جئے تو کیا ہے رؤف رضا

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY