یاد آئیں گے زمانے کو مثالوں کے لیے

فارغ بخاری

یاد آئیں گے زمانے کو مثالوں کے لیے

فارغ بخاری

MORE BY فارغ بخاری

    یاد آئیں گے زمانے کو مثالوں کے لیے

    جیسے بوسیدہ کتابیں ہوں حوالوں کے لیے

    دیکھ یوں وقت کی دہلیز سے ٹکرا کے نہ گر

    راستے بند نہیں سوچنے والوں کے لیے

    آؤ تعمیر کریں اپنی وفا کا معبد

    ہم نہ مسجد کے لیے ہیں نہ شوالوں کے لیے

    سالہا سال عقیدت سے کھلا رہتا ہے

    منفرد راہوں کا آغوش جیالوں کے لیے

    رات کا کرب ہے گلبانگ سحر کا خالق

    پیار کا گیت ہے یہ درد اجالوں کے لیے

    شب فرقت میں سلگتی ہوئی یادوں کے سوا

    اور کیا رکھا ہے ہم چاہنے والوں کے لیے

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY