Font by Mehr Nastaliq Web

aaj ik aur baras biit gayā us ke baġhair

jis ke hote hue hote the zamāne mere

رد کریں ڈاؤن لوڈ شعر

یہ غازہ ہے کاجل ہے ابٹن ہے کیا ہے

اخلاق احمد آہن

یہ غازہ ہے کاجل ہے ابٹن ہے کیا ہے

اخلاق احمد آہن

MORE BYاخلاق احمد آہن

    یہ غازہ ہے کاجل ہے ابٹن ہے کیا ہے

    یہ رنگ حنا داغ دامن ہے کیا ہے

    لٹک ہے مٹک ہے جھٹک ہے ادا ہے

    کھٹک ہے دھڑک ہے کہ دھڑکن ہے کیا ہے

    حیا کی بہاریں ہیں رعنائیوں پر

    یہ جلوہ ہے مستی ہے جوبن ہے کیا ہے

    یہ پھیلی ہوئی خوشبوؤں کی گھٹائیں

    یہ گیسو ہے کاکل ہے الجھن ہے کیا ہے

    تبسم کی بجلی قیامت کی شوخی

    یہ باراں ہے بادل ہے کڑکن ہے کیا ہے

    جو ساز ستم ہر طرف بج رہا ہے

    وہ پائل ہے چوڑی ہے کنگن ہے کیا ہے

    یہ کیسی جگہ ہے کہ دل کھو رہا ہے

    بیاباں ہے صحرا ہے گلشن ہے کیا ہے

    کہوں میں کبھو شعر ایسا تو کہیے

    شرارت ہے لغزش ہے بھٹکن ہے کیا ہے

    جنوں کا اثر آہنؔ بے نوا پر

    یہ جادو ہے ٹونا ہے بندھن ہے کیا ہے

    ગુજરાતી ભાષા-સાહિત્યનો મંચ : રેખ્તા ગુજરાતી

    ગુજરાતી ભાષા-સાહિત્યનો મંચ : રેખ્તા ગુજરાતી

    મધ્યકાલથી લઈ સાંપ્રત સમય સુધીની ચૂંટેલી કવિતાનો ખજાનો હવે છે માત્ર એક ક્લિક પર. સાથે સાથે સાહિત્યિક વીડિયો અને શબ્દકોશની સગવડ પણ છે. સંતસાહિત્ય, ડાયસ્પોરા સાહિત્ય, પ્રતિબદ્ધ સાહિત્ય અને ગુજરાતના અનેક ઐતિહાસિક પુસ્તકાલયોના દુર્લભ પુસ્તકો પણ તમે રેખ્તા ગુજરાતી પર વાંચી શકશો

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY

    Jashn-e-Rekhta | 8-9-10 December 2023 - Major Dhyan Chand National Stadium, Near India Gate - New Delhi

    GET YOUR PASS
    بولیے