یہ خوب رو نہ چھری نے کٹار رکھتے ہیں

بیاں احسن اللہ خان

یہ خوب رو نہ چھری نے کٹار رکھتے ہیں

بیاں احسن اللہ خان

MORE BYبیاں احسن اللہ خان

    یہ خوب رو نہ چھری نے کٹار رکھتے ہیں

    نگاہ لطف سے عالم کو مار رکھتے ہیں

    چراغ گور نہ شمع مزار رکھتے ہیں

    بس ایک ہم یہ دل داغ دار رکھتے ہیں

    شراب عشق نہ اے دوست پیجیو ہرگز

    اسی نشے کا ہم اب تک خمار رکھتے ہیں

    مری زبانی کوئی اس سے اس قدر پوچھے

    کہیں یہ جھوٹے بھی وعدے شمار رکھتے ہیں

    قیامت آ چکی دیدار حق ہوا سب کو

    ہم اب تلک بھی ترا انتظار رکھتے ہیں

    اگرچہ خاک برابر کیا فلک نے بیاںؔ

    دماغ پر وہی ہم خاکسار رکھتے ہیں

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY