یہ میری آہوں میں آنچ کیسی یہ تاؤ کیسا

تاثیر جعفری

یہ میری آہوں میں آنچ کیسی یہ تاؤ کیسا

تاثیر جعفری

MORE BYتاثیر جعفری

    یہ میری آہوں میں آنچ کیسی یہ تاؤ کیسا

    دہک رہا ہے یہ میرے اندر الاؤ کیسا

    یہ آگ کیسی دل حزیں میں لگی ہوئی ہے

    یہ آنسوؤں کا ہے جانب دل بہاؤ کیسا

    یہ کون ہم کو فلک سے پیہم بلا رہا ہے

    ہے اس جہاں میں یہ روز کا چل چلاؤ کیسا

    محبتوں میں روا نہیں ہے یہ وضع داری

    بنے ہو عاشق تو عشق میں رکھ رکھاؤ کیسا

    جب اشک آنکھوں کی حد کے اندر ہی موجزن ہیں

    تو پھر یہ آنکھوں کے ساحلوں میں کٹاؤ کیسا

    کوئی تو ہے جو مجھے ٹھہرنے کو کہہ گیا ہے

    سفر میں تاثیرؔ ورنہ ایسا پڑاؤ کیسا

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY