زلفیں سینہ ناف کمر

جاں نثاراختر

زلفیں سینہ ناف کمر

جاں نثاراختر

MORE BYجاں نثاراختر

    زلفیں سینہ ناف کمر

    ایک ندی میں کتنے بھنور

    صدیوں صدیوں میرا سفر

    منزل منزل راہ گزر

    کتنا مشکل کتنا کٹھن

    جینے سے جینے کا ہنر

    گاؤں میں آ کر شہر بسے

    گاؤں بچارے جائیں کدھر

    پھونکنے والے سوچا بھی

    پھیلے گی یہ آگ کدھر

    لاکھ طرح سے نام ترا

    بیٹھا لکھوں کاغذ پر

    چھوٹے چھوٹے ذہن کے لوگ

    ہم سے ان کی بات نہ کر

    پیٹ پہ پتھر باندھ نہ لے

    ہاتھ میں سجتے ہیں پتھر

    رات کے پیچھے رات چلے

    خواب ہوا ہر خواب سحر

    شب بھر تو آوارہ پھرے

    لوٹ چلیں اب اپنے گھر

    ویڈیو
    This video is playing from YouTube

    Videos
    This video is playing from YouTube

    نامعلوم

    نامعلوم

    RECITATIONS

    نعمان شوق

    نعمان شوق

    نعمان شوق

    زلفیں سینہ ناف کمر نعمان شوق

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY