aaj ik aur baras biit gayā us ke baġhair

jis ke hote hue hote the zamāne mere

رد کریں ڈاؤن لوڈ شعر

ہالی موالی کا مولوی ہونا

الطاف حسین حالی

ہالی موالی کا مولوی ہونا

الطاف حسین حالی

MORE BYالطاف حسین حالی

    ایک مرتبہ مولانا حالیؔ سہارنپور تشریف لے گئے اور وہاں ایک معزز رئیس کے پاس ٹھہرے جو بڑے زمیندار بھی تھے۔ گرمی کے دن تھے اور مولانا کمرے میں لیٹے ہوئے تھے۔ اسی وقت اتفاق سے ایک کسان آگیا۔ رئیس صاحب نے اس سے کہا کہ ’’یہ بزرگ جو آرام کررہے ہیں ان کو پنکھا جھل ‘‘ وہ بے چارہ پنکھا جھلنے لگا۔ تھوڑی دیر بعد اس نے چپکے سے رئیس صاحب سے پوچھا کہ ’’یہ بزرگ جو آرام کررہے ہیں، کون ہیں؟ میں نے ان کو پہلی مرتبہ یہاں دیکھا ہے۔‘‘ رئیس نے جواب دیا، ’’کم بخت تو ان کو نہیں جانتا، حالانکہ سارے ہندوستان میں ان کا شہرہ ہے۔ یہ مولوی حالیؔ ہیں۔‘‘ اس پر غریب کسان نے بڑے تعجب سے کہا، ’’جی کبھی ہالی (ہالی موالی) بھی مولوی ہوئے ہیں؟‘‘ مولانا لیٹے تھے، سو نہیں رہے تھے۔ کسان کا یہ فقرہ سن کر پھڑک اٹھے فوراً اٹھ کر بیٹھ گئے اور رئیس صاحب سے فرمانے لگے، ’’حضرت اس تخلص کی داد آج ملی ہے۔‘‘

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY

    Jashn-e-Rekhta | 8-9-10 December 2023 - Major Dhyan Chand National Stadium, Near India Gate - New Delhi

    GET YOUR PASS
    بولیے