اہل دل کو بلا رہا ہوں

شہرام سرمدی

اہل دل کو بلا رہا ہوں

شہرام سرمدی

MORE BYشہرام سرمدی

    مجھے ودیعت ہوئی ہے

    جب تک تمہاری آنکھیں

    مقام بینائی تک نہ پہنچیں

    سفید کاغذ کی روشنی کو

    سیاہ الفاظ سے مسلسل چھپائے رکھوں

    کہا گیا ہے یہ قول بھی دوں

    جب آنکھیں خیرہ نہ ہوں گی

    (یعنی مقام بینائی پر پہنچ جائیں گی)

    تو کاغذ سیاہ کرنا میں چھوڑ دوں گا

    نفی موعود ہیں یہ الفاظ

    اصل اثبات چشم بینا

    سفید کاغذ میں پڑھ رہی ہیں

    کہ حرف موعود بھی یہی ہے

    میں سطح کاغذ سے اپنے الفاظ اٹھا رہا ہوں

    اہل دل کو بلا رہا ہوں

    مآخذ :
    • کتاب : Na Mau'ud (Pg. 76)

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY