چاند اور تارے سلامت

کوثر صدیقی

چاند اور تارے سلامت

کوثر صدیقی

MORE BYکوثر صدیقی

    چاند اور تارے سلامت کہکشاں قائم رہے

    یہ زمیں قائم رہے یہ آسماں قائم رہے

    یا الٰہی دیش میں امن و اماں قائم رہے

    رقص ہستی کے لیے بزم جہاں قائم رہے

    حشر تک قائم رہے میرا چمن میرا وطن

    اور اس کی یہ بہار جاوداں قائم رہے

    یا الٰہی حشر تک مہکیں مرے گلشن کے پھول

    بلبلوں کا شاخ گل پر آشیاں قائم رہے

    چاند سورج آسماں پر جب تلک روشن رہیں

    گلشن ہندوستاں جنت نشاں قائم رہے

    کرشن کی بنسی بجے رادھا رہے مدھوبن رہے

    پیار کے نغموں میں ڈوبی وادیٔ گلشن رہے

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY