چپکے سے ادھر آ جاؤ

شہریار

چپکے سے ادھر آ جاؤ

شہریار

MORE BYشہریار

    دروازۂ جاں سے ہو کر

    چپکے سے ادھر آ جاؤ

    اس برف بھری بوری کو

    پیچھے کی طرف سرکاؤ

    ہر گھاؤ پہ بوسے چھڑکو

    ہر زخم کو تم سہلاؤ

    میں تاروں کی اس شب کو

    تقسیم کروں یوں سب کو

    جاگیر ہو جیسے میری

    یہ عرض نہ تم ٹھکراؤ

    چپکے سے ادھر آ جاؤ

    RECITATIONS

    نعمان شوق

    نعمان شوق

    نعمان شوق

    چپکے سے ادھر آ جاؤ نعمان شوق

    مآخذ :
    • کتاب : sooraj ko nikalta dekhoon (Pg. 541)

    موضوعات :

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY