ایک بار کہو تم میری ہو

ابن انشا

ایک بار کہو تم میری ہو

ابن انشا

MORE BYابن انشا

    ہم گھوم چکے بستی بن میں

    اک آس کی پھانس لیے من میں

    کوئی ساجن ہو کوئی پیارا ہو

    کوئی دیپک ہو، کوئی تارا ہو

    جب جیون رات اندھیری ہو

    اک بار کہو تم میری ہو

    جب ساون بادل چھائے ہوں

    جب پھاگن پھول کھلائے ہوں

    جب چندا روپ لٹاتا ہو

    جب سورج دھوپ نہاتا ہو

    یا شام نے بستی گھیری ہو

    اک بار کہو تم میری ہو

    ہاں دل کا دامن پھیلا ہے

    کیوں گوری کا دل میلا ہے

    ہم کب تک پیت کے دھوکے میں

    تم کب تک دور جھروکے میں

    کب دید سے دل کو سیری ہو

    اک بار کہو تم میری ہو

    کیا جھگڑا سود خسارے کا

    یہ کاج نہیں بنجارے کا

    سب سونا روپا لے جائے

    سب دنیا، دنیا لے جائے

    تم ایک مجھے بہتیری ہو

    اک بار کہو تم میری ہو

    ویڈیو
    This video is playing from YouTube

    Videos
    This video is playing from YouTube

    احمد جہانزیب

    احمد جہانزیب

    RECITATIONS

    فہد حسین

    فہد حسین,

    فہد حسین

    ایک بار کہو تم میری ہو فہد حسین

    مأخذ :
    • کتاب : Is Basti ke ik Kooche Men (Pg. 88)

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY

    Jashn-e-Rekhta | 2-3-4 December 2022 - Major Dhyan Chand National Stadium, Near India Gate, New Delhi

    GET YOUR FREE PASS
    بولیے