پاس رہو

فیض احمد فیض

پاس رہو

فیض احمد فیض

MORE BYفیض احمد فیض

    تم مرے پاس رہو

    مرے قاتل، مرے دل دار مرے پاس رہو

    جس گھڑی رات چلے،

    آسمانوں کا لہو پی کے سیہ رات چلے

    مرہم مشک لیے، نشتر الماس لیے

    بین کرتی ہوئی ہنستی ہوئی، گاتی نکلے

    درد کے کاسنی پازیب بجاتی نکلے

    جس گھڑی سینوں میں ڈوبے ہوئے دل

    آستینوں میں نہاں ہاتھوں کی رہ تکنے لگے

    آس لیے

    اور بچوں کے بلکنے کی طرح قلقل مے

    بہر نا سودگی مچلے تو منائے نہ منے

    جب کوئی بات بنائے نہ بنے

    جب نہ کوئی بات چلے

    جس گھڑی رات چلے

    جس گھڑی ماتمی سنسان سیہ رات چلے

    پاس رہو

    مرے قاتل، مرے دل دار مرے پاس رہو

    ویڈیو
    This video is playing from YouTube

    Videos
    This video is playing from YouTube

    نیرہ نور

    نیرہ نور

    RECITATIONS

    فیض احمد فیض

    فیض احمد فیض,

    شمس الرحمن فاروقی

    شمس الرحمن فاروقی,

    فیض احمد فیض

    پاس رہو فیض احمد فیض

    شمس الرحمن فاروقی

    پاس رہو شمس الرحمن فاروقی

    مأخذ :
    • کتاب : Nuskha Hai Wafa (Pg. 367)

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY

    Jashn-e-Rekhta | 2-3-4 December 2022 - Major Dhyan Chand National Stadium, Near India Gate, New Delhi

    GET YOUR FREE PASS
    بولیے