انفرادیت پرست

شکیب جلالی

انفرادیت پرست

شکیب جلالی

MORE BYشکیب جلالی

    ایک انساں کی حقیقت کیا ہے

    زندگی سے اسے نسبت کیا ہے

    آندھی اٹھے تو اڑا لے جائے

    موج بپھرے تو بہا لے جائے

    ایک انساں کی حقیقت کیا ہے

    ڈگمگائے تو سہارا نہ ملے

    سامنے ہو پہ کنارا نہ ملے

    ایک انساں کی حقیقت کیا ہے

    کند تلوار قلم کر ڈالے

    سرد شعلہ ہی بھسم کر ڈالے

    زندگی سے اسے نسبت کیا ہے

    ایک انساں کی حقیقت کیا ہے

    مآخذ:

    • کتاب : Kulliyat-e-Shakiib Jalali (Pg. 450)
    • Author : Mohd Nasir Khan
    • مطبع : Farid Book Depot Pvt. Ltd (2007)
    • اشاعت : 2007

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY