لمحۂ رخصت

مخدومؔ محی الدین

لمحۂ رخصت

مخدومؔ محی الدین

MORE BYمخدومؔ محی الدین

    کچھ سننے کی خواہش کانوں کو کچھ کہنے کا ارماں آنکھوں میں

    گردن میں حمائل ہونے کی بیتاب تمنا بانہوں میں

    مشتاق نگاہوں کی زد سے نظروں کا حیا سے جھک جانا

    اک شوق ہم آغوشی پنہاں ان نیچی بھیگی پلکوں میں

    شانے پہ پریشاں ہونے کو بے چین سیہ کاکل کی گھٹا

    وارفتہ نگاہوں سے پیدا ہے ایک ادائے زلیخائی

    انداز تغافل تیور سے رسوائی کا ساماں آنکھوں میں

    فرقت کی بھیانک راتوں کا رنگین تصور میں آنا

    افشائے حقیقت کے ڈر سے ہنس دینے کی کوشش ہونٹوں میں

    آنسو کا ڈھلک کر رہ جانا خوں گشتہ دلوں کا نذرانہ

    تکمیل وفا کا افسانہ کہہ جانا آنکھوں آنکھوں میں

    مأخذ :

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY

    Jashn-e-Rekhta | 2-3-4 December 2022 - Major Dhyan Chand National Stadium, Near India Gate, New Delhi

    GET YOUR FREE PASS
    بولیے