مہابھارت

غضنفر

مہابھارت

غضنفر

MORE BYغضنفر

    بن لادن

    تورا بورا میں ہوتا

    تو ایسی محشری مار

    جس سے

    پہاڑ سرمہ بن گئے

    زمین راکھ ہو گئی

    آسمان سیاہ پڑ گیا

    کب کا ختم ہو چکا ہوتا

    مگر کرۂ ارض پر جگہ جگہ

    ہیبت ناک آتشیں پھنکاریں

    کربناک دل دوز چیخیں

    اس حقیقت کی غماز ہیں

    کہ بن لادن

    مرا نہیں

    زندہ ہے

    یہ پھنکاریں اور چیخیں

    اس بات کی بھی دلیل ہیں

    کہ لادن

    تورا بورا کے علاوہ

    دوسرے خطوں میں بھی موجود ہے

    سوال یہ ہے کہ

    لادن ختم کیوں نہیں ہوا

    کیا وہ واقعی اتنا زبردست ہے

    کہ سارے جہان کی مجموعی طاقت بھی

    اس کے آگے ہیچ ہے

    کیا اس نے آب حیات پی لی ہے

    کہ کبھی مر نہیں سکتا

    کیا وہ قفس بن گیا ہے

    کہ اپنی خاکستر سے پھر پیدا ہو جاتا ہے

    کیا وہ شد سکندری ہے

    کہ یاجوج ماجوج کی زبانیں

    اسے پوری طرح چاٹ نہیں پاتیں

    کیا وہ راون ہے

    کہ اس کا ایک سر افغانستان میں

    تو باقی نو دوسرے جہاں میں

    اور کیا اس نے کوئی وردان پا لیا ہے

    کہ سر کٹ کر پھر دھڑ سے آ لگتا ہے

    کیا وہ بھیشم پتامہ ہے

    کہ اپنی اچھا کے بغیر مر نہیں سکتا

    کیا اس نے اپنا کلون بنا لیا ہے

    کہ اس کا خاتمہ نا ممکن ہو گیا ہے

    سوال یہ بھی ہے

    کہ میزائلوں کا نشانہ چوک کیوں جاتا ہے

    کیا ان کے پرزے ڈھیلے ہیں

    کہ وہ اپنا توازن کھو بیٹھتی ہیں

    بے سمتی کا شکار ہو جاتی ہیں

    کیا وہ اندھی ہیں

    کہ بن لادن کو دیکھ نہیں پاتیں

    کیا ان کی بینائی کمزور ہے

    کہ وہ لادن اور غیر‌‌ لادن میں تمیز نہیں کر پاتیں

    بن لادن کوئی سچ تو نہیں

    کہ شکونی کی چال اس کے آگے ناکام ہو جائے

    وہ لاکشا گرہ سے بچ کر نکل جائے

    اگیات باس سے واپس آ جائے

    اس کا چیر ہرن نہ ہو سکے

    تیروں کی شیا پر زندہ رہ جائے

    کہیں ایسا تو نہیں

    کہ میزائلیں اسے مارنا ہی نہیں چاہتیں

    اگر ایسا ہے

    تو یہ محشری مار

    کس کے لیے

    یہ مسلسل یلغار

    کیوں

    حیران و پریشان ارجن

    کروک شیتر میں چیختا پھر رہا ہے

    مگر آج کی مہابھارت میں

    ان سوالوں کا جواب دینے والا

    کوئی کرشن نہیں

    کوئی کرشن نہیں

    ویڈیو
    This video is playing from YouTube

    Videos
    This video is playing from YouTube

    غضنفر

    غضنفر

    مآخذ :
    • کتاب : Aank Mein Luknat (Pg. 208)
    • Author : Ghazanfar
    • مطبع : Maktaba Jamia Ltd. (2015)
    • اشاعت : 2015

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY