نیپولین کے مزار پر

جگن ناتھ آزاد

نیپولین کے مزار پر

جگن ناتھ آزاد

MORE BYجگن ناتھ آزاد

    کتنی روشن کیوں نہ ہو آزادؔ آخر ایک دن

    شمع ہستی موت کے جھونکوں سے گل ہو جائے گی

    جیسے گہوارے میں سو جاتا ہے طفل شیر خوار

    زیست آغوش اجل میں اس طرح سو جائے گی

    ماہ و اختر ہیں خجل جس سے وہ چنگاری ضرور

    اک نہ اک دن عالم ظلمات میں کھو جائے گی

    لیکن اس ظلمت کدے میں ایک نور ایسا بھی ہے

    گردش ایام جس کے پاس آ سکتی نہیں

    ایک ایسا بھی ہے لوح وقت پر نقش دوام

    کوئی شے بھی جس کو عالم سے مٹا سکتی نہیں

    موت جھونکے لے کے اٹھے یا بگولے لے کے آئے

    عظمت کردار کا شعلہ بجھا سکتی نہیں

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY