رب نواز مائل

محمد اظہار الحق

رب نواز مائل

محمد اظہار الحق

MORE BY محمد اظہار الحق

    کس لئے اس شے کا اب ماتم کروں

    کس لئے اس شے کا اب ماتم کروں

    روز و شب کا حسن جن لوگوں سے تھا وہ اور تھا

    ان کے اک اک رنگ روز و شب کا تھا

    کیا عجب آغاز ہستی، کیا عجب آغاز کار

    جیسے وہ ایثار پیشہ مرد دانا و غمیں

    جن کے دل میں درد رہتے تھے مکیں

    اک دیا تنہا کسی کا کیوں جلے

    ایسے ہی بس خواب تھے

    زندگی کو جانتے تھے اس طرح

    تم سے ہو مجھ سے ہو اور ان سب سے ہو

    کس لئے اس شے کا اب ماتم کروں

    آئنہ بر کف ادھر اپنے ہی ہیں

    یہ مرے وقتوں کے لوگ اور آپ میں

    مآخذ:

    • Book: Funoon (Monthly) (Pg. 493)
    • Author: Ahmad Nadeem Qasmi
    • مطبع: 4 Maklood Road, Lahore (Issue No. 25Edition Nov. Dec. 1986)
    • اشاعت: Issue No. 25Edition Nov. Dec. 1986

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY

    Added to your favorites

    Removed from your favorites