و یبقٰی وجہ ربک(ہم دیکھیں گے)

فیض احمد فیض

و یبقٰی وجہ ربک(ہم دیکھیں گے)

فیض احمد فیض

MORE BY فیض احمد فیض

    INTERESTING FACT

    سال 1985 میں جنرل ضیا الحق کے فرمان کے تحت عورتوں کے ساڑی پہننے پر پابندی لگا دی گئی تھی ۔ پاکستان کی مشہور گلوکارہ اقبال بانو نے احتجاج درج کراتے ہوئے لاہور کے ایک اسٹیڈیم میں کالے رنگ کی ساڑی پہن کر 50,000 سامعین کے سامنے فیض احمد فیض کی یہ نظم گائی ۔نظم کے بیچ بیچ میں سامعین کی طرف انقلاب زندہ باد کے نعرے گونجتے رہے ۔

    ہم دیکھیں گے

    لازم ہے کہ ہم بھی دیکھیں گے

    وہ دن کہ جس کا وعدہ ہے

    جو لوح ازل میں لکھا ہے

    جب ظلم و ستم کے کوہ گراں

    روئی کی طرح اڑ جائیں گے

    ہم محکوموں کے پاؤں تلے

    جب دھرتی دھڑ دھڑ دھڑکے گی

    اور اہل حکم کے سر اوپر

    جب بجلی کڑ کڑ کڑکے گی

    جب ارض خدا کے کعبے سے

    سب بت اٹھوائے جائیں گے

    ہم اہل صفا مردود حرم

    مسند پہ بٹھائے جائیں گے

    سب تاج اچھالے جائیں گے

    سب تخت گرائے جائیں گے

    بس نام رہے گا اللہ کا

    جو غائب بھی ہے حاضر بھی

    جو منظر بھی ہے ناظر بھی

    اٹھے گا انا الحق کا نعرہ

    جو میں بھی ہوں اور تم بھی ہو

    اور راج کرے گی خلق خدا

    جو میں بھی ہوں اور تم بھی ہو

    ویڈیو
    This video is playing from YouTube

    Videos
    This video is playing from YouTube

    اقبال بانو

    اقبال بانو

    نامعلوم

    نامعلوم

    ٹینا ثانی

    ٹینا ثانی

    نامعلوم

    نامعلوم

    RECITATIONS

    اقبال بانو

    اقبال بانو

    جاوید نسیم

    جاوید نسیم

    اقبال بانو

    و یبقٰی وجہ ربک(ہم دیکھیں گے) اقبال بانو

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY