noImage

آسی جھانسوی

اس کا پتہ کسی سے نہ پوچھو بڑھے چلو

فتنہ کسی گلی میں تو ہوگا اٹھا ہوا