Ahmad Salman's Photo'

احمد سلمان

1964 | کراچی, پاکستان

غزل

جو دکھ رہا اسی کے اندر جو ان_دکھا ہے وہ شاعری ہے

احمد سلمان

جو ہم پہ گزرے تھے رنج سارے جو خود پہ گزرے تو لوگ سمجھے

احمد سلمان

شبنم ہے کہ دھوکا ہے کہ جھرنا ہے کہ تم ہو

احمد سلمان

Recitation

aah ko chahiye ek umr asar hote tak SHAMSUR RAHMAN FARUQI