Akhtar Saeed Khan's Photo'

اختر سعید خان

1923 - 2006 | بھوپال, انڈیا

ترقی پسند ادبی نظرے کے شاعر، انجمن ترقی پسند مصنفین کے سکریٹری بھی رہے

ترقی پسند ادبی نظرے کے شاعر، انجمن ترقی پسند مصنفین کے سکریٹری بھی رہے

اختر سعید خان

غزل 36

اشعار 27

کسی کے تم ہو کسی کا خدا ہے دنیا میں

مرے نصیب میں تم بھی نہیں خدا بھی نہیں

  • شیئر کیجیے

تو کہانی ہی کے پردے میں بھلی لگتی ہے

زندگی تیری حقیقت نہیں دیکھی جاتی

زندگی کیا ہوئے وہ اپنے زمانے والے

یاد آتے ہیں بہت دل کو دکھانے والے

یہ دشت وہ ہے جہاں راستہ نہیں ملتا

ابھی سے لوٹ چلو گھر ابھی اجالا ہے

کون جینے کے لیے مرتا رہے

لو، سنبھالو اپنی دنیا ہم چلے

کتاب 10

 

آڈیو 11

آج بھی دشت_بلا میں نہر پر پہرا رہا

دل کی راہیں ڈھونڈنے جب ہم چلے

دل_شوریدہ کی وحشت نہیں دیکھی جاتی

Recitation

aah ko chahiye ek umr asar hote tak SHAMSUR RAHMAN FARUQI

"بھوپال" کے مزید شعرا

Recitation

aah ko chahiye ek umr asar hote tak SHAMSUR RAHMAN FARUQI