noImage

آصف ثاقب

1939

غزل 8

نظم 1

 

اشعار 7

سمیٹ لے گئے سب رحمتیں کہاں مہمان

مکان کاٹتا پھرتا ہے میزبانوں کو

رستے کی انجان خوشی ہے

منزل کا انجانا ڈر ہے

کس درجہ منافق ہیں سب اہل ہوس ثاقبؔ

اندر سے تو پتھر ہیں اور لگتے ہیں پانی سے