noImage

احتشام اختر

1944 | کوٹہ, انڈیا

احتشام اختر کے شعر

شہر کے اندھیرے کو اک چراغ کافی ہے

سو چراغ جلتے ہیں اک چراغ جلنے سے

مرے عزیز ہی مجھ کو سمجھ نہ پائے کبھی

میں اپنا حال کسی اجنبی سے کیا کہتا

سوچ ان کی کیسی ہے کیسے ہیں یہ دیوانے

اک مکاں کی خاطر جو سو مکاں جلاتے ہیں

تم جلانا مجھے چاہو تو جلا دو لیکن

نخل تازہ جو جلے گا تو دھواں بھی دے گا

Recitation

aah ko chahiye ek umr asar hote tak SHAMSUR RAHMAN FARUQI